Strings performed in Indian president house

Strings performed in Indian president house

Pakistani music band Strings has performed in front of Indian President Parnab Mukherjee in Rashtarpati Bhavan (President house). Strings are first Pakistani band who have performed in such a show. Their twenty minute performance was part of ‘South Asian Band Festival’. Indian music band ‘Advaita’ and Bangladeshi band ‘Love Runs Blind’ have also performed in the festival.

Strings presented some of their most famous numbers ‘Sar Kiye’, ‘Duur’ and ‘Zinda’. In the end Strings also sung ‘Laal Meri Pat’ with Bangladeshi and Indian bands.

Faisal Kapadia, lead vocalist of strings said, ‘It is an honor to perform in front of indian president. We presented Pakistani rock and pop music in front of him’

Bilal Maqsood, the other member of strings said ‘Once india, Pakistan and Bangladesh were united but are now separated by borders. It will be great If our music can unite the hearts again.”

Indian president Parnab Mukharjee expressed his best wishes for Strings band. Indian minister for new and renewable energy, Farooq Abdullah has also invited Strings to perform in Indian Occupied region of Jammu & Kashmir in January 2014, an offer accepted by Strings band.

The festival is still in progress, and fourteen bands from nine south Asian countries have participated in it.

string

About Strings

Faisal Kapadia and Bilal Maqsood created Strings a rock-pop band in 1989 and since then has won tremendous acclaim for introducing a new wave of Pakistani music. Their albums Duur in 2001 and Dhaani in 2004 garnered them the top spot amongst the sub-continent’s music culture and probably have more Indian fans than their own country. Amongst their eclectic body of work- Spiderman -2’s OST (Najane Kyun) for its India release, an anthem of sorts for the India-Pak cricket series in collaboration with Indian rock band Euphoria, songs for movie Zinda – starring Indian actor Sanjay Dutt and the soundtrack on Shootout at Lokhandwala. They have created a unique musical identity all their own by staying true to their Eastern roots incorporating ragas in their vocals, classical flute and sarangi tones to their music and thus merging the best of all worlds. They were first signed by major record label EMI during the release of their album in 1990 – Strings and their single “Sar Kiye Yeh Pahar” aired on MTV- Asia from their second album release made them a global hit. The year 2008 saw the release of their fifth album – Koi Aanay Wala Hai again renewed afresh their journey towards commercial success in India and was also co-produced by Indian actor John Abraham.

Here is the actual content from Voice of America – Urdu

کراچی — پاکستانی سنگرز کے سُر اور دھنیں پڑوسی ملک بھارت میں بھی اتنی ہی پسند کی جاتی ہیں جتنی پاکستان میں۔ عاطف اسلم سے لے کر راحت فتح علی خان تک بہت سے پاکستانی سنگرز بالی وڈ کی فلموں میں آواز کا جادو جگاتے نظر آتے ہیں اور کئی بلاک بسٹر ہٹس ہندی میوزک کو دے چکے ہیں۔ لیکن، پاکستانی بینڈ ’اسٹرنگز‘ نے وہ اعزاز اپنے نام کیا جو اب تک کسی اور کے حصے میں نہیں آیا۔ اور وہ اعزاز ہے بھارتی صدر پرناب مکھرجی کے سامنے پرفارم کرنے کا۔

’اسٹرنگز‘ وہ پہلا پاکستانی بینڈ ہے جسے ’راشٹر پتی بھون‘ یعنی پریذیڈنٹس ہاوٴس میں اپنے فن پیش کرنے کا موقع ملا۔ تقریب تھی نئی دہلی کے پرانے قلعے میں سجنے والا ’ساوٴتھ ایشین بینڈز فیسٹول‘ کا آغاز جس میں پاکستان کے علاوہ بھارت کے بینڈ ’ایڈویٹا‘ اور بنگلہ دیش کے ’لو رنز بلائنڈ‘ نے بھی پرفارم کیا۔

اسٹرنگز نے 20 منٹ کی انفرادی پرفارمنس میں اپنے مقبول ترین نمبرز ’دور‘، ’سر کئے‘ اور ’زندہ‘ پیش کرکے بھارتی ایوان صدر میں سماں باندھ دیا۔ اختتام پر بھارتی اور بنگلہ دیشی بینڈز کے ساتھ مل کر ’لال میری پَت‘ شاندار طریقے سے پیش کیا۔

اسڑنگز کے لیڈ سنگر، فیصل کپاڈیہ کا کہنا ہے ’بھارتی صدر پرناب مکھرجی کے سامنے پرفارم کرنا بہت عزت اور اعزاز کی بات تھی۔ ہم نے ان کے سامنے پاکستانی پاپ راک میوزک پیش کیا۔‘

اسٹرنگز کے ایک اور بینڈ ممبربلال مقصود نے اپنے خیالات کا اظہار یہ کہہ کر کیا کہ ’پہلے پاکستان، بھارت اور بنگلہ دیش ایک تھے۔ آج سرحدوں میں تقسیم ہوچکے ہیں لیکن اگر ہمارا میوزک دلوں کو ایک ہی لڑی میں پرونے کے کام آ سکتا ہے تو اس سے زیادہ ہمیں کچھ نہیں چاہئے۔‘

بھارت کے صدر پرناب مکھرجی نے فیصل کپاڈیہ اور بلال مقصود سے ملاقات میں نیک خواہشات کا اظہارکیا۔اس موقع پر میوزیکل ایونٹ میں بھارت کی ہر شعبے سے تعلق رکھنے والی نمایاں شخصیات موجود تھیں۔

فیس بک پر ’اسٹرنگز‘ کے آفیشل پیج کے علاوہ دیگر سوشل نیٹ ورکنگ سائٹس پر بھی ’اسٹرنگز‘ کی پرفارمنس کا چرچا ہے۔ ’اسٹرنگز‘ کے ہزاروں نوجوان فینز ’اسٹرنگز‘ کے میوزک اور اسٹائل کی تعریف کررہے ہیں جبکہ میوزک ایوننگ میں موجود لوگوں نے ’اسٹرنگز‘ کی پرفارمنس کو سب سے یادگار پرفارمنس قرار دیا۔

بھارت کے وزیر برائے نیو اور رینیو ایبل انرجی فاروق عبداللہ نے ’اسٹرنگز‘ کو آئندہ سال جنوری میں کشمیر میں پرفارم کرنے کی دعوت دی جو انہوں نے قبول کرلی۔ فیسٹول ابھی جاری ہے اور اس میں ساوٴتھ ایشیا کے نو ملکوں کے چودہ بینڈز شرکت کر رہے ہیں۔

Source: http://www.urduvoa.com/content/pakistani-band-strings-in-india/1801877.html

Rashid Nazir Ali